پاکستان

کالم : کام کی ابتداء سے انتہا تک

کالم : کام کی ابتداء سے انتہا تک

کالم نگار : محمد حسن مختار 17

دسمبر 1903 کو دو بھائیوں کا شوق پورا ہوا اور دنیا میں پہلے ہوائی جہاز کا کامیاب تجربہ ہوا ۔ دو بھائی جن کو دنیا ” Wright Brothers ” کے نام سے جانتی ہے دنیا میں پہلا ہوائی جہاز بنا کر تاریخ میں ایک انقلاب برپا کر دیا ۔ آج جو ایک ملک سے دوسرے ملک کا سفر اتنے کم وقت میں ہورہا ہے یہ دو بھائیوں کی انتھک محنت کا نتیجہ ہے ۔ لیکن جو ایک بات دنیا کو حیران کر دیتی ہے وہ اس جہاز کی پہلی اڑان ہے آج جو جہاز کئی کئی گھنٹے تک ہوا میں اڑان بھرتا ہے اس کی پہلی اڑان صرف اور صرف بارہ سیکنڈز کی تھی پھر پندرہ سیکنڈز کی ہوئی اور تیسری کوشش پر ایک منٹ کے قریب ہوئی ۔ ان بارہ سیکنڈز کے پیچھے دو بھائیوں کی کئی سال کی محنت تھی اور وہ مسلسل محنت آج اس مقام تک پہنچی ہے کہ انسان کئی ایک ملک سے دوسرے ملک بہت آسانی کے ساتھ سفر کر سکتا ہے ۔ دنیا میں ہر کام کی ابتداء بہت چھوٹی ہوتی ہے لیکن اس کی انتہا بہت اعلی اور بلند ہوتی ہے ۔ آسمان سے بارش ایک ایک قطرہ کر کے برستی ہے لیکن مسلسل برستی رہے تو سیلاب لے آتی ہے ، ایک طالبعلم کلاس کی شروعات میں ایک ایک لائن یاد کرتا ہے لیکن آخر میں پوری کتاب یاد کرلیتا ہے ، ہماری زیادہ تر دوستی السلام علیکم سے شروع ہوتی ہے اور آخر میں ہم جگری دوست بن جاتے ہیں ، ایک کاروبار کے شروع میں انسان خود سارا کام سرانجام دے رہا ہوتا ہے لیکن آخر میں اس کے ساتھ اور لوگ بھی شامل ہو جاتے ہیں ۔کسی نے کیا خوب کہا ہے : ” اگر پہاڑ کو سرکانے کی خواہش ہے ، تو پہلے ذروں کو سرکانا سیکھو ” دنیا میں تمام عظیم کاموں کی شروعات بہت چھوٹی تھی لیکن آخر میں ان عظیم کاموں نے دنیا میں انقلاب برپا کر دیا ۔اگر آپ بھی کوئی منزل یا مقام کی تلاش میں ہیں ، اگر آپ بھی کوئی بڑا کام سرانجام دینا چاہتے ہیں تو ایک بات یاد رکھنی ہوگی آپ کی شروعات بہت چھوٹی ہوگی ۔ شروعات اتنی چھوٹی ہوگی کی آپ کو لوگوں کےسامنے بھی بتاتے ہوئے شرم آئے گی کہ میں کیسے بتاؤں میں کیا کام کر رہا ہوں ، اور ابھی کس مقام پر ہوں لیکن جب آپ وہ کام خلوص سے مسلسل کرتے رہیں گے تو آپ کو ایک دن اپنے کام پر بھی فخر ہوگا ۔جب شروعات چھوٹی ہوگی تو ہوسکتا ہے لوگ آپ کا مزاق بھی اڑائیں لیکن جب آپ صبر کرکے اس کام کر کرتے رہیں گے تو ایک دن آئے گا جب لوگ اپنا تعارف آپ کے نام کے ساتھ کروائیں گے کہ جی جو فلاں ہے وہ میرا دوست ہے ، رشتے دار ہے، ہم اکٹھے بڑے ہوئے ہیں ۔ایک دانا کو قول ہے : “”” لوگ پہلے آپ کو نظر انداز کریں گے پھر وہم آپ کا مزاق اڑائیں گے پھر وہ آپ سے جھگڑا کریں گے اور پھر آخر میں آپ کامیاب ہو جاو گے “” آپ جہاں بھی ہو بس مسلسل محنت کرتے رہو آپ کی محنت رکنی نہیں چاہیے آپ عظیم بن جاو گے ۔ کبھی کسی چھوٹے کام سے مت گھبراؤ کیونکہ چھوٹا کام بھی کوئی کام نہ کرنے سے بہتر ہے۔ اگر آپ چاہتے ہیں کی مجھے آخر میں خو پھل ملنا ہے وہ شروع میں ہی مل جائے تو یہ ناممکن ہے ۔ آپ کو ایک لمبا چکر لگا کر کامیابی ملے گی آپ نے راستے میں مشکلات بھی دیکھنی ہیں ، اپنوں کے روپ میں پرائے بھی دیکھنے ہوں گے اور آپ کو تنقیدیں بھی سنیں ہوں گی اور پھر کسی نے کیا خوب کہا ہے : ” آرام کی تلاش میں بے آرام ہونا لازمی امر ہے ورنہ نتیجہ معلوم ہے ”

google.com, pub-9821533189288546, DIRECT, f08c47fec0942fa0
Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close