انٹر نیشنلپاکستانکاروبار

بیرون ملک سے رقم بھیجنے والے پاکستانیوں کے لیے مراعات کا خصوصی پیکج تیار

وفاقی حکومت روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس کی کامیابی کے بعد بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو قانونی طریقے سے رقوم گھر بھجوانے میں آسانیاں فراہم کرنے اور ترغیب دینے کے لیے ایک نئے مراعاتی پیکج پر کام کر رہی ہے۔ 
وزیراعظم کے سمندر پار پاکستانیوں کے لیے معاون خصوصی سید ذوالفقار عباس بخاری نے اردو نیوز کو ایک خصوصی انٹرویو میں بتایا ہے کہ ان کی وزارت خزانہ سے مشاورت کے بعد اس بات کا اصولی فیصلہ ہو گیا ہے کہ قانونی طریقے سے پاکستان رقوم بھجوانے والوں کے لیے ایک نیا مراعاتی پیکج جلد پیش کیا جائے گا۔ 

انہوں نے کہا کہ ’اس (مراعاتی پیکج) میں پی آئی اے کا، سامان کا، شاید گاڑیوں کا، موبائل کا، اس میں کئی ایسی چیزیں ہیں، جو وزارت خزانہ نے ہمیں ’گو آ ہیڈ‘ دیا ہے۔ لیکن ایسی چیزیں ہوں کہ لوگوں کو فائدہ ملے کہ وہ اس کے ذریعے بھیجیں، یا روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ کے ذریعے بھیجیں تو ان کو یہ فائدے ملیں، تا کہ وہ ہنڈی، حوالہ، ایسی چیزیں نہ استعمال کیا کریں۔‘

 ان کا کہنا تھا کہ روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس سکیم نے شاندار کامیابی حاصل کی ہے اور اس کے ذریعے قومی خزانے میں خطیر زرمبادلہ کا اضافہ ہوا ہے۔ 
’ستر ہزار سے زیادہ اکاؤنٹس کھل گئے ہیں، تین سو ملین ڈالر تک پاکستان میں لوگوں نے یہاں واپس بھیجے ہیں تو بہت زیادہ کامیاب ہوئے ہیں۔ خاص طور پر جو بیرون ملک پاکستانی ہیں انہوں نے حسب معمول زبردست رسپانس دیا ہے۔‘
ذوالفقار بخاری نے بتایا کہ کورونا سے پہلے سعودی عرب میں ہماری ایک سو چھ فیصد نوکریاں بڑھی تھیں۔
انہوں نے کہا کہ کورونا سے پہلے سعودی عرب میں ہماری ایک سو چھ فیصد نوکریاں بڑھی تھیں اور کورونا کے دوران بھی بہت کم پاکستانی واپس آئے ہیں۔  
’پوری دنیا کو بھی اگر آپ ملا لیں، ساری دنیا کے ممالک ملا کے بھی آپ کریں تو کوئی (ایک) لاکھ لوگ واپس آئے ہیں۔ یہ یاد رکھیں کہ ہم نے دس لاکھ لوگ اٹھارہ مہینوں میں باہر بھیجے تھے۔‘  
ذوالفقار بخاری نے کہا کہ حکومت نے بیرون ملک پاکستانیوں کی بہتر خدمت کے لیے سماجی اتاشیوں کی تعداد میں اضافہ کر دیا ہے۔
’جہاں ہماری ہیوی ٹریفک ہے، سعودی عرب، وہاں ہمارے چار تھے، ہم نے چھ کر دیے ہیں۔ متحدہ عرب امارات میں تین تھے، ہم نے چار کر دیے ہیں، قطر میں ایک تھے، ہم نے دو کر دیے ہیں۔ بلکہ وہاں ہم نے خاص طور پر ایک پشتو بولنے والا  بھیجا ہے کیونکہ وہان ہمارے پشتو بولنے والے بھائی اور بہن زیادہ ہیں۔‘  
دیگرممالک میں پاکستانیوں کے لیے روزگار کے مواقع کے بارے میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے ذوالفقار بخاری نے کہا کہ ’جرمنی کے ساتھ ہماری بات چیت چل رہی ہے، کووڈ ختم ہوگا تو میرا وہاں دورہ ہو گا۔ مجھے پوری امید ہے کہ ہم وہاں بھی کامیاب ہوں گے۔‘
انہوں نے بتایا کہ ’جاپان ایک بہت بڑی کامیابی ہے ہماری، اس میں بھی ابھی شروع ہو جائیں گے۔ ابھی اس کے لینگویج کورسز چل رہے ہیں۔ کویت میں ہم نے پہلی دفعہ تیرہ سال بعد لوگ بھیجنا شروع کر دیے ہیں تو یہ ایک بہت بڑی کامیابی تھی۔ رومانیہ میں لوگ بھیجے ہیں ہم نے کافی، کووڈ کی وجہ سے چیزیں رک گئی تھیں۔ رومانیہ بھی ہم کافی رفتار سے لوگ بھیج رہے تھے۔‘ 
ذوالفقار بخاری کے بقول ’این ایچ اے کے ساتھ انگلینڈ میں بھی ہماری بات چیت ہے، ان کی بھی ڈیمانڈ آئی ہوئی ہے کوئی دو ہزار ہیلتھ ورکرز کی، وہاں لینگویج کا تھوڑا سا مسئلہ ہے، ہمارے لوگ پاس نہیں ہوتے جو ٹیسٹ ہے ان کا۔ لیکن اس کے لیے ہم کوشش کر رہے ہیں۔‘ 
ذوالفقار بخاری کا کہنا ہے کہ روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس سکیم کے ذریعے قومی خزانے میں خطیر زرمبادلہ کا اضافہ ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بیرون ملک پاکستانیوں کے قانونی معاملات جلد نمٹانے کے لیے فاسٹ ٹریک عدالتوں کا معاملہ آخری مرحلے پر ہے اور اگلے ماہ تک ان کا قیام ممکن ہو جائے گا۔  

google.com, pub-9821533189288546, DIRECT, f08c47fec0942fa0
Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close